Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

اللہ کی مدد قریب ہے (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 685 - Naveed Masood Hashmi - Allah ki Madad Qareeb Hay

اللہ کی مدد قریب ہے

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 685)

اِیمان والے ہر دور میں آزمائے گئے ۔۔۔ آج بھی اِیمان والوں کو آزمایا جا رہا ہے، سورۂ عنکبوت میں اللہ تعالیٰ  ارشاد فرماتے ہیں کہ’’ کیا لوگوں نے یہ سمجھ رکھا ہے کہ اُنھیں یوں ہی چھوڑ دیا جائے گا کہ بس وہ کہہ دیں کہ ہم ایمان لے آئے اور ان کو آزمایا نہ جائے‘‘۔

سیدنا ابو ہریرہؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: ’’دنیا مومن کیلئے قید خانہ اور کافر کیلئے  جنت ہے‘‘۔ یعنی دنیا میں کافر کی نسبت ایک مومن کو مصائب و مشکلات، تنگیوں اور پریشانیوں کا زیادہ سامنا کرنا پڑتا ہے۔۔۔ جس کا مطلب یہ ہے کہ کافر کے دُنیاوی وَسائل اور دُنیاوی راحت و آسائش کی، اس جہنم کے مقابلے میں کوئی حیثیت نہیں ہے جو کافروں کو آخرت میں ملنے والی ہے۔

اسی طرح مسلمان، مومن کی دنیا کی عارضی تکلیفیں، پریشانیاں، گرفتاریاں، ہتھکڑیاں، بیڑیاں، انٹروگیشن سینٹرز، عقوبت خانے، جیل کی کال کوٹھڑیاں، اور مشکلات، اس کی جنت اور آخرت کے راحت و آرام کے مقابلے میں کوئی حیثیت نہیں رکھتیں۔

باقی نصیب، اپنا، اپنا ہے۔۔۔ کام اپنا، اپنا۔ کسی کے حصے میں کافروں کی خوشنودی کیلئے اِیمان والوں کو ہتھکڑیاں پہنا کر قید خانوں کا رِزق بنا کر تالیاں پیٹنا۔۔۔ اور کسی کے حصے میں بیڑیاں لگواکر، ہتھکڑیاں پہن کر بے گناہ ہونے کے باوجود گرفتاریوں کا عذاب سہہ کر مسکرانا.. بے گناہ ہونے کے باوجود گرفتاریوں کا عذاب سہہ کر بھی اِستقامت کے ساتھ کھڑے رہنے والوں کو ہی تو قرآن بشارتیں اورخوشخبریاں سنا رہا ہے۔

دجالی میڈیا چیخ رہا ہے کہ مولانا محمد مسعود ازہر کے برادر صغیر مفتی عبدالرؤف اصغر سمیت ان کے درجنوں ساتھیوں کو گرفتار کر لیا گیا، میڈیا بتا رہا ہے  کہ کالعدم جہادی تنظیموں کے182 مدارس و مساجد،190ایمبولینسز، درجنوں سکوٹرز،5ہپستال اور163ڈسپنسریز کو حکومتی تحویل میں لے لیا گیا۔۔۔ لیکن یہاں پہ میرا سوال حکومت اور دجالی میڈیا کے ان پنڈتوں سے ہے کہ جو’’جہادیوں‘‘ پر دہشتگردی کی صہیونی پھبتی کستے ہوئے نہیں شرماتے۔۔۔ کیا بہاولپور سمیت پاکستان کے کسی کونے کھدرے سے فورسز کو کسی ہلکی سی مزاحمت کا سامنا بھی کرنا پڑا؟

جس ملک میں ثبوتوں کی روشنی میں پاکستان کی سب سے بڑی عدالت ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی کی سزا دے، تو دجالی میڈیا اسے’’ شہید‘‘ قرار دیتا ہے، جس ملک میں ثبوتوں کی روشنی میں نواز شریف کو سزا ہو جائے تو ن لیگی اور ان کا غلام میڈیا عدالتوں کو ہی مطعون کرنا شروع کر دیتا ہے، جس ملک میں آصف علی زرداری کو گرفتاری کے خدشات لاحق ہوں تو وہ اِداروں کی اینٹ سے اینٹ بجانے کی دھمکیاں دینا شروع کر دیتا ہے، اور میڈیا ان کی ہمنوائی میں مخالفین کو رگیدنا شروع کر دیتا ہے۔۔۔ اس ملکِ پاکستان میں مفتی عبدالرؤٖف اصغر سمیت دیگر سینکڑوں’’جہادیوں‘‘ کو گرفتار کر لیا جاتا ہے، اور ردعمل میں جہادی، فورسز کے خلاف ذرا بھر بھی مزاحمت نہیں کرتے۔۔ مگر دجالی میڈیا پھر بھی انھیں دہشتگرد اور  کالعدم کے ناموں سے پکار کر ان پر طرح طرح کی الزام تراشیاں کرتا ہے۔

رسول کریمﷺ کے سچے غلاموں اور یہود و ہنود و نصاریٰ کے غلاموں میں یہی تو فرق ہے۔۔۔ رسول کریمﷺ کے غلاموں کا رُعب کافروں کے دِلوں پر طاری ہوتا ہے۔۔۔ وقت اور حالات نے’’جہادی‘‘ اور’’فسادی‘‘ کے فرق کو خود، بخود ظاہر کر دیا ، جن کے نام سن کر نریندر مودی کی دھوتی گیلی ہو جاتی ہے۔۔۔ پاکستان میں بے گناہ ہونے کے باوجود انھوں نے ایک دفعہ پھر قید و بند کی مصیبتوں کو انتہائی خنداں پیشانی سے یہ سوچ کر جھیل لیا کہ

اپنوں کے نشتر سہہ لینا

ٹکرانا فقط بیگانوں سے

اگر خدانخواستہ وہ’’فسادی‘‘ ہوتے تو اب تک خون کی ندیاں بہہ چکی ہوتیں۔۔۔ مگر الحمدللہ وہ واقعی’’جہادی‘‘ نکلے۔۔۔ پکے، سچے اور خالص جہادی۔۔۔ کچھ تاریک راتوں کی پیداوار۔۔۔ سوشل میڈیا پر ہندوؤں کی ہاں میں ہاں ملا کر ان پر تبراء بھیجنا عبادت سمجھے ہوئے ہیں۔۔۔ اور کچھ ٹی وی چینلز کے سٹوڈیوز میں بیٹھ کر ان پہ گھٹیا اِلزام تراشیاں کر رہے ہیں۔۔۔ لیکن یہ سارے چمگادڑوں کی طرح اُلٹے بھی لٹک جائیں تب بھی ان سے جذبۂ جہاد چھین سکتے ہیں اور نہ ہی جہادی ہونے کا اعزاز۔

سوشل میڈیا اور چینلز کے ان’’فسادیوں‘‘ اور بے گناہ ہونے کے باوجود گرفتار ہونے والے’’ جہادیوں‘‘ میں یہی تو اصل فرق ہے کہ انہیں یہودی دانش گاہوں نے فساد سکھایا ہے، اور انہوں نے قرآن و سنت سے’’جہاد‘‘ سیکھا ہے، یہ جس واشنگٹن اور دہلی کی غلامی میں نطریات فروشی اور ضمیر فروشی کرتے ہیں۔۔۔ وہ اس واشنگٹن اور دہلی کی آنکھوں میں کانٹے کی طرح کھٹکتے ہیں۔۔۔ لوگ سیاست کے نام پر جیبیں بھرنا بڑی کامیابی سمجھتے ہیں۔۔۔ یہ ایسے سر پھرے ہیں کہ جو ’’جہاد‘‘ جیسی مقدس عبادت کے جرم میں جیلیں بھرنا اپنے لئے سعادت سمجھتے ہیں۔۔۔

وزیراعظم پاکستان ہو وزیر مملکت برائے داخلہ ہو یا آئی ایس پی آر کے ترجمان، سب مانتے بھی ہیں اور جانتے بھی ہیں کہ۔۔۔ بھارت نے جو مراسلہ پاکستان کے حوالے کیا ہے اس میں نام ضرور ہیں مگر ثبوت ایک بھی نہیں۔

لیکن اس کے باوجود کشمیر کے جہاد سے محبت رکھنے والوں کو گرفتار کر کے حکومت عالمی طاقتوں کو خوش کر سکتی ہے  تو اس کی مرضی، لیکن گرفتار ہونے والے جہادی بہرحال ناکام نہیں بلکہ کامیاب ہیں کامیاب، یہ دنیا دارالعمل اور آخرت دارالجزاء ہے، ظاہر ہے جو شخص عملی میدان میں جتنا محنت و مشقت اور جدوجہد و مجاہدہ برداشت کرے گا۔۔۔ بعد میں اسی تناسب سے اُسے راحت و آرام میسر آئے گا، یہ بات بھی ذہنوں میں رہنی چاہئے کہ ضروری نہیں کہ اللہ تعالیٰ کی مدد فوراً آجائے۔۔۔ بلکہ بعض اوقات اللہ تعالیٰ حضرات انبیاء کرام علیہ السلام کی مدد و نصرت میں بھی تاخیر فرما دیتے ہیں۔۔۔ جیسا کہ قرآن کریم میں ارشاد خداوندی ہے کہ:

’’ کیا تم کو یہ خیال ہے کہ تم لوگ جنت میں چلے جاؤ گئے، حالانکہ تم پر نہیں گزرے ان لوگوں جیسے حالات جو تم سے پہلے کے تھے، کہ پہنچی ان کو سختی اور تکلیف اور انہیں ہلا ڈالا گیا، یہاں کہ رسول اور ان کے ساتھ ایمان لانے والے بول اٹھے کہ کب آئے گی اللہ کی مدد؟یاد رکھو کہ اللہ کی مدد قریب ہے‘‘(سورہ بقرہ)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor